ملک میں شیل گیس کے ذخائر کی دریافت کے سلسلے میں اہم پیشرفت - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

ملک میں شیل گیس کے ذخائر کی دریافت کے سلسلے میں اہم پیشرفت


او جی ڈی سی ایل نے سندھ میں کنٹر پساکھی کے مقام پر شیل گیس کی تلاش کے لیے جگہ کا تعین کرلیا
اسلام آباد (ڈیلی قدرت) ملک میں شیل گیس کے ذخائر کی دریافت کے سلسلے میں اہم پیشرفت ہوئی ہے جب کہ او جی ڈی سی ایل نے سندھ میں کنٹر پساکھی کے مقام پر شیل گیس کی تلاش کے لیے جگہ کا تعین کرلیاہے.او جی ڈی سی ایل ذرائع کے مطابق شیل گیس کی موجودگی کے حوالے سے ملک بھر میں سروے کرائے گئے، سروے اور تحقیق کے بعد ملنے والی معلومات کی روشنی میں سندھ میں شیل گیس کے وسیع ذخائر پائے جانے کے ثبوت ملے ہیں، کنڑ پساکھی کے مقام پر شیل گیس کے ذخائر موجود ہیں اور اس علاقے میں شیل گیس کی تلاش کی سرگرمی شروع کرنے کے لیے جگہ کا تعین کرلیا گیا ہے. غالب امکان ہے کہ جون تک کام کاآغاز کر دیا جائے گا، اس جگہ پر پہلا کنواں آزمائشی بنیادوں پر کھودا جائے گا اور اسے تجارتی بنیادوں کے بجائے صرف تلاش کی مزید سرگرمیوں کے سلسلے میں تحقیقی مقاصد کے لیے استعمال کیاجائے گا.ذرائع کا دعوی ہے کہ کنڑ پساکھی میں نشاندہی کی گئی جگہ پر شیل گیس ملنے کے زیادہ امکانات ہیں، اس مقام پر او جی ڈی سی ایل اور پی پی ایل مل کر کام کریں گے. ذرائع نے بتایاکہ او جی ڈی سی ایل نے دیگرکمپنیوں کو بھی شیل گیس کی تلاش کے لیے مل کر کام شروع کرنے کی پیشکش کی تھی تاہم نجی کمپنیوں نے کوئی مثبت جواب نہیں دیاگیا.شیل گیس ڈھونڈنے کی سرگرمیاں انتہائی مہنگی اور کامیابی کی شرح کم ہونے کی وجہ سے کمپنیاں اس سلسلے میں ہچکچاہٹ کا مظاہرہ کررہی ہیں جبکہ حکومت کی جانب سے شیل گیس کی پالیسی کا اعلان بھی نہیں کیاگیا، سرکاری سطح پر مراعات نہ ہونے کے باعث بھی اس جانب کمپنیوں کا رجحان کم ہے.ذرائع نے بتایاکہ دیگر روایتی گیسوں کی نسبت شیل گیس پر زیادہ اخراجات آتے ہیں اور ملنے والی گیس کا حجم کم ہوتا ہے اس لیے کمپنیاں اس جانب سرمایہ کاری میں دلچسپی نہیں لے رہیں، اگر اوجی ڈی سی ایل اور پی پی ایل کا یہ منصوبہ کامیاب ہوجاتاہے تو اس سے نہ صرف ملک بلکہ عالمی سطح پر بھی اچھا رجحان قائم ہوگا اور دیگر کمپنیاں بھی اس شعبے میں سرمایہ کاری پر آمادہ ہوں گی.
 

..

مزید خبریں :

سروے