امریکی دھمکیاں ،ترجمان پاک فوج کا دورس احسن موقف 
Can't connect right now! retry

امریکی دھمکیاں ،ترجمان پاک فوج کا دورس احسن موقف 

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ امریکی صدرکے بیان پرقومی ردعمل خوش آئندہے،پاکستان اورپاک فوج نے پیسوں کیلئے جنگ نہیں لڑی،افغانستان میں امن سے سب کوفائدہ ہوگا، پاکستان اپنے وقارپرسمجھوتانہیں کریگا، پاکستان اور امریکا کومل کرآگے بڑھناہے،پاکستان اور امریکااب بھی دوست ہیں،افغانستان میں امن سے سب کوفائدہ ہوگا،ہم چاہتے ہیں امریکاافغانستان میں کامیاب ہو،پاکستان اور امریکا ایک دوسرے کے اتحادی ہیں ، اتحادیوں کے درمیان جنگ نہیں ہو سکتی، فوج کسی سیاسی عمل کا حصہ نہیں بنے گی .،افغانستان میں امن سے سب کوفائدہ ہوگا،ہم چاہتے ہیں امریکاافغانستان میں کامیاب ہو،پاکستان اور امریکا ایک دوسرے کے اتحادی ہیں ، اتحادیوں کے درمیان جنگ نہیں ہو سکتی .

میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ آج بھی ہماری 2لاکھ سے زائدفوج سرحدپرموجودہے، افغانستان میں ایک کھرب ڈالرخرچ کرنیکانتیجہ سب کومعلوم ہے، امریکانیافغانستان میں جتناخرچ کیااس کاایک فیصدپاکستان میں لگا، ایک وقت تھاہمارے پاس چوائس تھی کہ روس کے پاس جائیں،امریکی صدرکے بیان پرقومی ردعمل خوش آئندہے،پاکستان اورپاک فوج نے پیسوں کیلئے جنگ نہیں لڑی،افغانستان میں امن سے سب کوفائدہ ہوگا، پاکستان اپنے وقارپرسمجھوتانہیں کریگا، پاکستان اور امریکا کومل کرآگے بڑھناہے،پاکستان اور امریکااب بھی دوست ہیں،افغانستان میں امن سے سب کوفائدہ ہوگا،ہم چاہتے ہیں امریکاافغانستان میں کامیاب ہو. الیکشن کا وقت قریب ہے ، سیاسی جماعتیں ایک دوسرے کے خلاف بیانات دے رہیں ہیں ، پاک فوج سیاسی عمل کا حصہ نہیں بنے گی،پہلے بھی کہا تھا کہ اسٹبلشمنٹ کے سیاسی عمل میں ملوث ہونے کے ثبوت ہیں تو سامنے لائے جائیں ،نواز شریف کا امریکا کے خلاف بیان بہت خوش آئند ہے ہم نے ایک زبان ہو کر بیانیہ اپنایا ہے

،پاکستان کے حالات میں ضرورت ہے کہ ہم اکٹھے ہوکر چلیں. بھارت نہیں چاہے گا کہ پاکستان کو دہشتگردی کے خلاف کامیابیاں حاصل ہوں ، بھارت نہیں چاہتا کہ پاکستان کے قدم امن کی طرف بڑھتے رہیں،ہمارے قدم کامیابی کی طرف بڑھ رہے تھے تو کلبھوشن کا معاملہ آگیا،بھارت سے درپیش مسائل کے حل کے بغیر خطے میں امن مشکل ہے،نکی ہیلی کا بیک گراؤنڈ بھارتی ہے .امریکہ کی آئے روز دھمکیوں اور پھر ہمارے سیاستدانوں کے منافقانہ بیانات صورتحال خراب کررہے ہیں جبکہ یہی سیاستدان درپردہ امریکی کاسہ لیسی میں بھی مصروف ہیں پاک فوج کے ترجمان نے جو کچھ کہا وہ بالکل درست اور امریکہ کی کاسہ لیسی نہیں بلکہ صحیح خارجہ پالیسی کا شاخسانہ ہے جبکہ انہی سیاستدانوں نے ہماری خارجہ پالیسی کو ناکام بنایا ہے امریکی افواج انکے خفیہ ادارے اور ہماری افواج وخفیہ ادارے سیاستدانوں کی نسبت خطے کی صورتحال سے سیاستدانوں سے زیادہ باخبر ہیں ترجمان پاک فوج کا امریکی دھمکیوں اور افغانستان کی صورتحال پر موقف بالکل درست اور دورس نتائج کا حامل ہے .
 

..