’اس طریقے سے واک کرنے سے مردانہ کمزوری دور ہوجاتی ہے‘ سائنسدانوں نے مردوں کو سب سے بہترین طریقہ بتادیا
Can't connect right now! retry

’اس طریقے سے واک کرنے سے مردانہ کمزوری دور ہوجاتی ہے‘ سائنسدانوں نے مردوں کو سب سے بہترین طریقہ بتادیا

برمنگھم(قدرت روزنامہ) واک کرنا صحت کے لئے اچھا ہے لیکن تھوڑی سی تیز واک کر لی جائے تو مردانہ صحت کے لئے تو بہت ہی اچھا ہے.ماہرین صحت کہتے ہیں کہ آپ روزانہ دومیل کی تیز واک کر کے مردانہ کمزوری کا مسئلہ بآسانی حل کر سکتے ہیں.

تیز واک کے دو طریقے ہیں، اول یہ کہ آپ تیز تیز قدم اٹھائیں اور دوم یہ کہ لمبے قدم اٹھائیں. اپنی واک میں ان دونوں طریقوں کو وقفے وقفے سے استعمال کریں تو اصل فائدہ حاصل ہوگا. اور بھی کئی ایسی ورزشیں ہیں جو مردانہ کمزوری کے شکار افرادکے لئے بہت مفید ثابت ہو سکتی ہیں.

مثانے کے پٹھوں کی ورزش ،جسے کیگل ورزش کہا جاتا ہے ،بھی بہت مؤثر پائی گئی ہے.ان پٹھوں کی ورزش مختلف طریقوں سے کی جاسکتی ہے. مثال کے طور پر آپ کمر کے بل سیدھے لیٹ جائے اور پھر اپنے پیر اور کندھے زمین پر رکھتے ہوئے باقی جسم کو اوپر اٹھائیں.جسم کو کچھ وقت کے لیے فضا میں رکھیں اور پھر آہستہ آہستہ واپس زمین پر لے آئیں.

اسی طرح مثانے کے پٹھوں کو براہِ راست سکیڑنا اور پھیلانا بھی انہیں مضبوط کرنے کا بہترین طریقہ ہے. اس ورزش کے لیے اپنے مثانے کے پٹھوں کو اندر کی جانب کھینچتے ہوئے سکیڑیں ،یوں جیسے آپ پیشاب روکنے کی کوشش کر رہے ہوں،اور کچھ دیر اسی حالت میں رکھنے کے بعد انہیں آہستہ آہستہ ڈھیلا چھوڑ دیں.اس عمل کو جتنی بار ممکن ہو دھرائیں. فزیکل فٹنس کے ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ ورزشیں باقاعدگی سے کریں تو مردانہ کمزوری کا خدشہ ہی نہیں رہتا اور اگر کسی کو کمزوری پہلے ہی لاحق ہو تو وہ کچھ ہی عرصے میں اس سے نجات پا سکتا ہے.

..