مقبوضہ کشمیر،جعلی مقابلے میں ایک اور نوجوان شہید ،فوجی گاڑی الٹنے سے افسر سمیت9اہلکار زخمی - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

مقبوضہ کشمیر،جعلی مقابلے میں ایک اور نوجوان شہید ،فوجی گاڑی الٹنے سے افسر سمیت9اہلکار زخمی


سرچ آپریشن کے دوران ایک گھر سے فائرنگ کے بعد کارروائی کی گئی،مارا جانے والا پاکستانی ہے ،بھارتی فوج کا دعویٰ 
فوجی دعویٰ مسترد،زیر حراست نوجوان کو حاجن لاکر مقابلے کا ڈرامہ رچایا گیا،فورسز کے ساتھ جھڑپوں میں متعدد افراد زخمی ہوئے،مقامی لوگوں کا الزام 
ترال میں نوجوان کو گولی مار دی گئی،اترسو میں بارودی شل پھٹنے سے 2کم عمر لڑکے زخمی، جنگجوؤں کی ہلاکتوں پر ترال اور حاجن علاقوں میں ہڑتال،انٹرنیٹ اور موبائل سروس بھی بند،مشکوک افراد کے داخلے کی اطلاع پر ڈی سی آفس پلوامہ کا محاصرہ اور تلاشیاں،فورسز کو کوئی کامیابی نہیں ملی 
سرینگر(اے این این ) مقبوضہ کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ کے علاقے حاجن میں بھارتی فوج نے فرضی مقابلے میں ایک اور نوجوان کو مجاہد قرار دے کر شہید کر دیا ہے جبکہ ہندواڑہ میں فوجی گاڑی الٹنے سے افسر سمیت 9اہلکار زخمی ہو گئے ،ترال میں نوجوان کو گولی مار دی گئی،اترسو میں بارودی شل پھٹنے سے 2کم عمر لڑکے زخمی، جنگجوؤں کی ہلاکتوں پر ترال اور حاجن علاقوں میں ہڑتال،انٹرنیٹ اور موبائل سروس بھی بند،مشکوک افراد کے داخلے کی اطلاع پر ڈی سی آفس پلوامہ کا محاصرہ اور تلاشیاں،فورسز کو کوئی کامیابی نہیں ملی .تفصیلات کے مطابق جمعرات کی صبح بانڈی پورہ میں بھارتی فوج نے ایک اور نوجوان کو مجاہد قرار دے کر شہید کر دیا ہے . بھارتی فوج کے مطابق بانڈی پورہ کے علاقے حاجن میں گاؤں شاکرالدین میں مجاہدین کی موجودگی کی اطلاع پر علاقے کو محاصرے میں لے کر سرچ آپریشن کیا گیا .آپریشن میں بھارتی فوج ،پولیس اور سی آر پی ایف کے اہلکاروں نے حصہ لیا.آپریشن کے دوران ایک گھر سے فورسز پر فائرنگ کی گئی جس کے جواب میں فورسز نے مکان کو نشانہ بنایا.جوابی کارروائی میں ایک مبینہ مجاہد شہید ہو گیا ہے .مارے جانے والے نوجوان کے قبضخے سے اے کے 47رائفل برآمد ہو ئی ہے اور اس کی شناخت نہیں ہوسکی.فورسز کے مطابق مارا جانے والا ممکنہ طور پر پاکستانی شہری ہے.فورسز کے مطابق کارروائی کے دوران لوگوں کی بڑی تعداد نے احتجاج کیا اور بھارتی فورسز پر شدید پتھراؤ کیا گیا.اس دوران فورسز اور مقامی لوگوں کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں .دوسری جانب مقامی لوگوں نے الزام عائد کیا ہے کہ بھارتی فورسز نے نوجوان جو جعلی مقابلے میں شہید کیا گیا ہے .زیر حراست نوجوان کو علاقے میں لاکر مقابلے کا ڈرامہ رچایا گیا ہے .بھارتی فورسز کے ساتھ جھڑپوں میں متعدد افراد زخمی ہوئے .دریں اثناء ہندوارہ کے لنگیٹ علاقہ میں ایک فوجی گا ڑی کو اس وقت حادثہ پیش آ یا جب وہ ہندوارہ سے بارہ مولہ کی جانب جارہی تھی .معلوم ہوا ہے کہ لنگیٹ کے مین چوک میں ایک فوجی گاڑی الٹ گئی جسمیں ایک جے او سی سمیت 9فوجی اہلکار شدید طور زخمی ہوئے . زخمی اہلکارو ں کو فوری طور درگمولہ کے فوجی اسپتال منتقل کیا گیا جہا ں ان کا علاج و معالجہ جاری ہے .ادھر ترال میں نا معلوم بندوق برداروں نے ایک مقامی نوجوان کو گولی مار کر بری طرح زخمی کر دیا جسکی حالت نازک قرار دی جارہی ہے.ترال میں بدھ کی شام ساڑھے 6 بجے کے قریب نا معلوم بندوق برداروں نے اعجاز احمد شاہ ولدمرحوم علی محمد شاہ ساکن ترال پائین پر گول مسجد کے نزدیک گولی چلا کر اسے بری طرح زخمی کر دیا . اسے ابتدائی علاج معالجے کے لئے ترال ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں سے انہیں سرینگر منتقل کیا گیا . معلوم ہوا ہے کہ ا عجاز احمد پتھراؤ کے الزام میں بند تھا اور اسے حال ہی میں رہا کیا گیا ہے.اس سے قبل بھی اعجاز احمد نے کافی وقت جیلوں اور تھانوں میں گزارا ہے. تاہم فوری طور معلوم نہیں ہو سکا کہ اعجاز کو کس جرم کی پاداش میں گولی مار دی گئی ہے .ادھرزیر حراست جنگجو کی ہلاکت کے خلاف تیسرے روز بھی قصبے میں مکمل ہڑتال کی وجہ سے معمولات زندگی بری طرح مفلوج رہی . قصبے میں تمام طرح کے کار باری ادارے مکمل بند رہے . آری پل اور ترال تحاصیل میں تمام کارو باری اور تجارتی مراکز بند رہے جب کہ سڑکوں سے ٹرانسپوٹ غائب رہنے کی وجہ سے دفاتر میں ملازمین کی حاضری نہ ہونے کے برابر رہی .ادھرشمالی قصبہ حاجن میں لشکر جنگجو کی ہلاکت کے دوسرے روز بھی علاقے میں مکمل ہڑتال کی وجہ سے عام زندگی معطل ہوکر رہ گئی. اس دوران پولیس نے غیر ملکی جنگجو کی قبر کو منہدم کرنے کی خبر کو سراسر شر انگیز قرار دیاہے. علاقے میں تمام دکانیں اور دیگر کاروباری ادارے بدھ کو بھی بند رہے اور ٹرانسپورٹ معطل رہا. اس دوران قصبہ میں دوسر ے روز بھی انٹرنیٹ سہولیات بندرہیں کیونکہ کل صبح یہاں ایک غیر ملکی جنگجوکی قبرمنہدم کرنے کی افواہ گشت کرنے لگی تھی. پولیس نے غیر ملکی جنگجوکی قبر منہدم کرنے کی افواہ کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے عوام سے اپیل کی کہ وہ اس سلسلے میں سوشل میڈیا پر پھیلائی گئی افواہ کی طرف دھیان نہ دیں.دریں اثنا اترسو شانگس میں فوج کی بلاسٹنگ جگہ پر دو کم عمر لڑکے باردوی شے کے ساتھ کھیلتے ہوئے دھماکے میں زخمی ہوئے.بتایا جاتا ہے کہ اترسو شانگس میں پنچایت محلہ رکھ براہ کے نزدک بلاسٹنگ جگہ پر دو لڑکے14سالہ لیاقت خان ولد امجد خان اور 12سالہ اشفاق خان ولد عارف خان کسی بارودی شے سے کھیل رہے تھے جس کے دوران دھماکہ ہوا اور وہ دونوں زخمی ہوئے. انہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا جہاں انکی حالت مستحکم ہے.اس دوران ڈی سی آفس پلوامہ میں دومشکوک افراد کے اندر داخل ہونے کے فورا بعد فورسز نے محاصرہ کیا اور قریب ایک گھنٹے تک تلاشی کارروائی عمل میں لائی گئی. پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ، فوج کی55آر آر اور سی آر پی ایف 183بٹالین سے وابستہ اہلکاروں کی ایک بڑی تعداد نے بدھ کی دوپہر ساڑھے12بجے کے قریب ضلع ترقیاتی کمشنر پلوامہ آفس کمپلیکس کو اس وقت گھیرے میں لیاجب آفس کے متصل سی آر پی ایف183بٹالین کیمپ کے آس پاس نصب سی سی ٹی وی کیمروں کی نگرانی پر مامور اہلکاروں نے بھاری بیگ ہاتھوں میں لئے دو نوجوانوں کو مشکوک حالت میں ڈی سی آفس کے اندر جاتے دیکھا. اسی اثنا میں فورسز اہلکاروں کی بھاری تعداد نے ڈی سی آفس کو چاروں طرف سے محاصرے میں لیا. اس وقت آفس میں لوگوں کی بھاری بھیڑ موجود تھی.سیکورٹی فورسز نے تمام ملازمین کو آفس کے احاطے میں جمع کیا جبکہ وہاں موجود عام لوگوں کی سخت جامہ تلاشی لینے کے ساتھ ساتھ ان کے شناختی کارڈ بھی چیک کئے گئے .بعد میں آفس کی مختلف عمارات میں موجود تمام کمروں کی باریک بینی سے تلاشی لی گئی.ادھر فوج کی 55راشٹریہ رائفلز اور پولیس ٹاسک فورس نے دوران شب پلوامہ کے مضافاتی دیہات اشمندر پلوامہ کو محاصرے میں لیکر تلاشی کارروائی کی. دوران تلاشی مکینوں کے شناختی کارڈ چیک کئے گئے.تاہم فورسز کو کوئی کامیابی نصیب نہ ہوئی .
 

..