مریم نواز کا اپنے آپ کو حضرت بی بی فاطمہ رضی اللہ عنہا سے مشابہت کرنا مہنگا پڑا، عالم دین حرکت میں آگئے ، بڑا ایکشن لے لیا - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

مریم نواز کا اپنے آپ کو حضرت بی بی فاطمہ رضی اللہ عنہا سے مشابہت کرنا مہنگا پڑا، عالم دین حرکت میں آگئے ، بڑا ایکشن لے لیا


لاہور(قدرت روزنامہ) تحریک لبیک یا رسول اللہؐ کے مرکزی چئیرمین ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی نے مریم نواز کے سوشل میڈیا کنونشن راولپنڈی میں سیرتِ طیبہ کے ایک واقعہ سے غلط استدلال کرنے پر شدید ردّ عمل کا اظہار کیا ہے.انھوں نے کہا کہ قیادت اور سیاست کے دعویداروں کو دینی اور شرعی امور کے بارے میں بیان دینے سے پہلے قرآن و سنت کے کسی ماہر سے رہنمائی لینا فرض ہے. واضح رہے کہ اس سےقبل پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز نے لیاقت باغ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میرے والد حق اور سچ کے رستے پر ہیں انھوں نے اس موقع پر رسول اللہ ﷺ کی زندگی کا واقعہ بیان کرتے ہوئے کہا کہ جب ہمارے پیارے نبیؐ حضرت محمد ﷺ خانہ کعبہ میں نما ز ادا کرتے اور سجدے میں جاتے تو کفار گھنائونی حرکت کرتے تھے تو آپؐ کی صاحبزادی حضرت فاطمہؓ ان کےاوپر سے وہ ہٹاتی جاتیں تھی اور روتی جاتیں تھی. مریم نواز نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میرے بھائیوں فتح ہوئی ناپھر کیونکہ والد حق پر تھا، والد سچے راستے پر تھا تو نواز شریف جو آپ کا لیڈر اور میرا باپ ہے وہ بھی حق اور سچ کے راستے پر ہے .مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز کا کہنا ہے کہ چھپ کر وار کرنےوالے گیدڑ ہوتے ہیں اور گیدڑوں کے ڈر سے شیروں کے قافلے نہیں رکتے.راولپنڈی کے فوارہ چوک پر جلسہ نما ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ عوام کی نواز شریف سے محبت میں شدت کی وجہ پتہ ہے

اور معلوم ہے کہ آپ کے لیڈر کے ساتھ جو کیا گیا اس کا دکھ ہے.مریم نواز نے کارکنان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ نا آپکا لیڈر دھرنوں سے پیچھے ہٹا اور نا سازشوں سے تاہم اب مخالفین اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئے ہیں.مریم نواز نے کہا کہ گیدڑوں کے ڈر سے شیروں کے قافلے نہیں رکتے، شیروں کا مقابلہ جوتوں سے نہیں ہو سکتا اور گیدڑوں کے بزدلانہ وار کو سینے پر لینے والا نواز شریف ہوتا ہے.سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی نے کہا کہ اوچھے ہتھکنڈوں پر تب ہی اترتے ہیں جب دلیل ختم ہوجاتی ہے، یاد رکھنا دشمن ہار مان چکا ہے.عمران خان کا نام لیے بغیر انہیں تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ ‘ایک مذمتی بیان دینے سے سمجھتے ہو کہ لوگ تمہیں معاف کردیں گے، تم نے 4 سال شرمناک کلچر پروموٹ کیا، کس نے کہا تھا کہ وزیراعظم ہاؤس سے انہیں گردن سے پکڑ کے باہر نکالو.مریم نواز نے مزید کہا کہ اس انسان کا نام لینے کی ضرورت نہیں اور وہ لیڈر کہلانے کا حقدار نہیں جس کی سوچ، زبان اور فیصلے اپنے نا ہوں.

..