’میں سو کر اُٹھا تو عورت میرے سرہانے کھڑی تھی، اس کے چہرے پر مکمل طور پر۔۔۔‘ خاتون کے بھوت سے تنگ نوجوان نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر ہی انسان کانپ اُٹھے - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

’میں سو کر اُٹھا تو عورت میرے سرہانے کھڑی تھی، اس کے چہرے پر مکمل طور پر۔۔۔‘ خاتون کے بھوت سے تنگ نوجوان نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر ہی انسان کانپ اُٹھے


لندن(قدرت روزنامہ)ہمارے ہاں جنوں بھوتوں کی کہانیاں بہت عام پائی جاتی ہیں لیکن اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ترقی یافتہ ممالک میں ایسی کہانیاں نہیں پائی جاتیں تو ایسا بالکل بھی نہیں ہے. گاہے بگاہے مافوق الفطرت مخلوقات سے متعلقہ کہانیاں مغربی ممالک میں بھی سامنے آتی رہتی ہیں اور ایک برطانوی نوجوان کی ایک ایسی ہی پراسرار کہانی نے انٹرنیٹ صارفین کو خوفزدہ کر رکھا ہے. ڈیلی سٹار کے مطابق اس 25 سالہ نوجوان نے اپنے ساتھ پیش آنے والے خوفناک واقعے کی تفصیلات ایک پیرانارمل فورم پر بیان کی ہیں. اس کا کہنا ہے کہ ”میری زندگی میں عجیب و غریب واقعات اس وقت شروع ہوئے جب میں ایک بچہ تھا لیکن وقت کے ساتھ ان میں شدت آتی گئی. وہ ایک خاتون کا بھوت تھا جس نے بچپن سے ہی میرا تعاقب کرنا شروع کردیا تھا. میں جہاں بھی جاتا تھا وہ میرے پیچھے ہوتی تھی. میں ہمیشہ محسوس کرتا تھا کہ میرے پیچھے کوئی ہے، یہ کوئی ایسی چیز تھی جسے میں پوری طرح سمجھ نہیں پاتا تھا لیکن اس کی موجودگی کو محسوس کرسکتا تھا.  یہ معاملہ سالہا سال تک یونہی چلتا رہا لیکن 11 ماہ قبل کی بات ہے کہ ایک روز میری آنکھ کھلی تو اپنے بیڈ کے سرہانے ایک عورت کو کھڑے ہوئے پایا. یہ پہلا موقع تھا کہ میں اسے واضح طور پر اپنی آنکھوں کے سامنے دیکھ رہا تھا.

اس کا چہرہ سپاٹ تھا جس پر کسی طرح کے خدوخال نہیں تھے، نا آنکھیں، نا ہونٹ اور نا ہی کسی طرح کے تاثرات. اسے دیکھ کر میر اجسم ٹھنڈا پڑنے لگا. میں بیان نہیں کرسکتا کہ یہ خوف کتنا شدید اور گہرا تھا. میں ایک بچے کی طرح چیخنے لگا اور اُٹھ کر باہر کی جانب بھاگا. اس دن کے بعد میں نے دوبارہ اسے کبھی نہیں دیکھا.“ اس دن کے بعد نوجوان نے دوبارہ خاتون کے بھوت کو تو نہیں دیکھا البتہ اس کا کہنا ہے کہ وہ اس کے آس پاس ہی ہے اور اسے تنگ کرتی رہتی ہے. اس نے بتایا ”میرے ساتھ تازہ ترین واقعہ یہ پیش آیا ہے کہ ایک دن میں اپنے فلیٹ میں اکیلا تھا.

مجھے میرا فون اور چابیاں کہیں نہیں مل رہی تھیں. میں کچھ دیر کے لئے گھر سے باہر گیا لیکن جب واپس آیا تو دونوں چیزیں میرے سامنے میز پر پڑی تھیں. ابھی کچھ دیر پہلے ہی میں اس میز کو خالی دیکھ کر گیا تھا. شاید مجھے ساری زندگی اسی خوف میں گزارنی پڑے گی کیونکہ مجھے نہیں لگتا کہ یہ بلا کبھی میرا پیچھا چھوڑے گی.“

..

مزید خبریں :