بلوچستان میں حکومت بنانا پی ٹی آئی قیادت کے لیے سنہرا خواب۔۔۔ اتحادی جماعتوں نے بڑا یو ٹرن لے لیا - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

بلوچستان میں حکومت بنانا پی ٹی آئی قیادت کے لیے سنہرا خواب۔۔۔ اتحادی جماعتوں نے بڑا یو ٹرن لے لیا


کوئٹہ (قدرت روزنامہ)بلوچستان نیشنل پارٹی کا مرکز اور صوبے میں حکومت کا حصہ بننے کا تاحال میں فیصلہ نہیں ہوسکا.نجی ٹی وی چینل جیو نیوز نے ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ بی این پی وفاق اور صوبے میں حکومت کا حصہ بننے کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کر سکی.

ضرور پڑھیں: کہاں سورج چمکے گا اور کہاں بارشیں ہو ں گی؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کیلئے اہم پیشگوئی کر دی

بی این پی کی جانب سے پی ٹی آئی کی مرکزی قیادت کے سامنے6نکات رکھے گئے ہیں جن میں لاپتہ افراد کی بازیابی بھی شامل ہیں .بی این پی کا کہناتھا کہ تحریک نصاف کی حکومت میں شامل ہونے کا فیصلہ نکات پر عملدرآمد کی یقین دہانی کے بعد کیا جائے گا.جب تک اس پر پیشرفت نہیں ہوئی بلوچستان نیشنل پارٹی تحریک انصاف کا ساتھ نہیں دے گی.دریں اثنا نجی ٹی وی چینل اے آر وائی کے مطابق تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے بی این پی کو منانے کا ٹاسک شاہ محمود قریشی کو دے دیا ہے جو بی این پی کی قیادت سے ملاقات کریں گے اور ان کے تحفظات دور کرنے کی کوشش کریں گے. جبکہ دوسری جانب ایک اور خبر کےمطابق تحریک انصاف نے عمران خان کو وزیراعظم کا باضابطہ امیدوار نامزد کرنے کے لیے پارلیمانی پارٹی کا اجلاس کل طلب کرلیا.عام انتخابات میں واضح اکثریت کے بعد تحریک انصاف وفاق میں حکومت سازی کے لیے مصروف ہے اور اس سلسلے میں اسے آزاد امیدواروں سمیت ایم کیوایم اور (ق) لیگ کی حمایت بھی مل چکی ہے.ترجمان تحریک انصاف فواد چوہدری کےمطابق پارٹی کی کُل پارلیمانی پارٹی کا اجلاس کل بنی گالہ میں طلب کیا گیا ہے جس میں تمام منتخب ارکان کو شرکت یقینی بنانے کی ہدایت گئی ہے.فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ کل کے اجلاس میں عمران خان کو وزیراعظم کا باضابطہ امیدوار نامزد کیا جائے گا.ترجمان پی ٹی آئی کے مطابق آزاد ارکان کی شمولیت کے بعد تحریک انصاف کے ارکان کی تعداد 125 ہوگئی ہے جب کہ وزیراعظم کے لیے اتحادیوں، خواتین اور اقلیتوں کے ساتھ تحریک انصاف کا نمبر 174 تک جا پہنچا ہے جو اپوزیشن سے زیادہ ہے.ان کا کہناتھاکہ بلوچستان نیشنل پارٹی کی حمایت کے بعد نمبر گیم 177 تک پہنچ جائے گا.عمران خان کا کابینہ مختصر رکھنے کا فیصلہ دوسری جانب تحریک انصاف نے حکومت سازی سے متعلق اہم فیصلے کرلیے ہیں جس کے تحت ممکنہ وزیراعظم عمران خان کی وفاقی کابینہ مختصر ہوگی.پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے حکومت سازی کے بعد پہلے مرحلے میں 15 سے 20 وزراء پر مشتمل کابینہ تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے.ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان کی وفاقی کابینہ میں متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کا بھی ایک وزیر ہوگا اور بعد میں ایم کیو ایم سے ایک مشیر لیا جائے گا.ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم کو وزارت پورٹ اینڈ شپنگ اور وزارت محنت و افرادی قوت دینے پر غور کیا جارہا ہے.ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ق) کے چوہدری پرویز الٰہی پنجاب اسمبلی میں اسپیکر ہوں گے تاہم مرکز میں مسلم لیگ (ق) کو کوئی وزارت نہیں ملے گی.ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ میں بلوچستان، سندھ، خیبر پختونخوا اور پنجاب کی نمائندگی ہوگی اور زیادہ تعداد ارکان قومی اسمبلی کی ہوگی جب کہ اتحادیوں کو بھی اہم وزارتیں ملنے کا امکان ہے.ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ کی اولین ترجیح سادگی اور کفایت شعاری اپنانا ہوگی اور وزراء کی کارکردگی عمران خان خود مانیٹر کریں گے.(ز،ط)..

ضرور پڑھیں: علیم خان ، یاسر راجہ اور یاسمین راشد کی چھٹی! وزارت اعلیٰ پنجاب کیلئے تحریک انصاف کا مضبوط ترین امیدوار سامنے آگیا

مزید خبریں :