ڈالرکی قیمت میں اتنا زیادہ اضافہ ہوجائے گا کسی نے سوچا بھی نہ ہوگا،آنے والے دنوں میں ڈالر کی قیمت کہاں تک پہنچ جائے گی؟ تباہ کن پیش گوئی کردی گئی - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

ڈالرکی قیمت میں اتنا زیادہ اضافہ ہوجائے گا کسی نے سوچا بھی نہ ہوگا،آنے والے دنوں میں ڈالر کی قیمت کہاں تک پہنچ جائے گی؟ تباہ کن پیش گوئی کردی گئی


کراچی (قدرت روزنامہ)ڈالر کی قدر کے بارے میں ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ آنے والے دنوں میں قیمت138 روپے تک پہنچ جائیگی اور تاریخ کے اس بلند ترین اضافے کی وجہ سے 7ہزار کے قریب اشیا مہنگی ہوجائینگی. جن میں درآمدی ایل پی جی ایل این جی درآمدی خام مال سونا چاندی لوہا تانبا جان بچانے والی ادویات گاڑیوں کے پرزہ جات پروفیومز کاسمیٹکس ملبوسات بیرون ممالک تعلیم بچوں کا خشک دودھگاڑیوں کے اسپیئر پارٹسآلات جراحی گھڑیاںموبائلز کمپیوٹر الیکٹرانکس کا سامان پلاسٹک کی مصنوعات و دیگر شامل ہیں.

ضرور پڑھیں: کہاں سورج چمکے گا اور کہاں بارشیں ہو ں گی؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کیلئے اہم پیشگوئی کر دی

دریں اثناء پاکستانی روپے کی قدر میں کمی کے باعث ملک میں اسٹیل کی قیمت میں ہو شربا اضافے سے شعبہ تعمیرات میں رکاوٹ دیکھنے میں آئی.اسٹیل ڈیلر نے بتایا کہ اپریل میں فی ٹن اسٹیل 97 ہزار روپے میں دستیاب تھا لیکن اب میعاری اسٹیل کی فی ٹن قیمت 1 لاکھ 7 ہزار روپے سے 1 لاکھ 10 ہزار روپے تک پہنچ چکی ہے.بی ایم اے کیٹبل میں فیض السلطان نے بتایا کہ امریلی اسٹیل نے فی ٹن قیمت پر 4 ہزار روپے تک بڑھا دی ہے، رواں برس فروری کے بعد سے چوتھی مرتبہ قیمت بڑھائی گئی جو مجموعی طور پر 20 فیصد بنتی ہے.انہوں نے بتایا کہ ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں تنزلی لوہلے کی قیمت میں اضافے کا باعث بنی، مقامی مارکیٹ میں روپے کی قدر میں دسمبر 2017 سے اب تک 21 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی.قیمتوں میں اضافے کے بعد درآمدی اور مقامی طور پر تیار کیے جانے والے اسٹیل کی قیمتوں میں 20 فیصد کا فرق رہ گیا ہے تاہم عالمی مارکیٹ میں اسکریپ کی قیمتوں میں استحکام آیا ہے جبکہ جون میں آخری مرتبہ اضافے کی اطلاع تھی.سنیئر وائس چیئرمین ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز آف پاکستان (آباد) فیاض الیاس نے بتایا کہ گزشتہ 6 ماہ کے دورانتعمیرات کی لاگت میں 10 سے 12 فیصد اضافہ ہوگیا ہے، ماضی میں سریا 80 ہزار روپے فی ٹن سے 84 ہزار روپے فی ٹن مل رہا تھا.دوسری جانب سیمنٹ کی قیمتوں میں گزشتہ 6 ماہ کے دوران اضافے سے بھی تعمیرات کی لاگت میں 10 فیصد اضافہ ہوا جبکہ روپے کی قدر میں کمی سے ٹائلز اور سینٹری کے سامان کی قیمت میں 5 سے 6 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا.انہوں نے کہا کہ حکومت کو پالیسی مرتب دینے کی ضرورت ہے تاکہ بلڈرز شعبہ تعمیرات کا سامان درآمد کرسکےتاکہ مقامی صنعت کے طاقت ور سیمنٹ اور اسٹیل بنانے والوں کا گٹھ جوڑ توڑا جاسکے.چیئرمین آباد عارف جیوا نے بتایا کہ اطلاعات ہیں کہ مزید ٹیکس لائے جانے کا امکان ہے جس کے بعد شبعے کی صورت حال مزید خراب ہو جائے گی اور بالآخر ٹیکس کی وجہ سے عوام متاثر ہوں گے.ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں 1 کروڑ 20 لاکھ ہاؤسنگ یونٹس کی کمی ہے اور اگر حکومت نے ٹیکس لگائے تو تعمیراتی لاگت ناقابل برداشت ہو جائے گی.

..

ضرور پڑھیں: علیم خان ، یاسر راجہ اور یاسمین راشد کی چھٹی! وزارت اعلیٰ پنجاب کیلئے تحریک انصاف کا مضبوط ترین امیدوار سامنے آگیا

مزید خبریں :