کرپشن کے خلاف جہاد،فوری بلا امتیاز سزائیں دیئے بغیر ممکن نہیں  - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

کرپشن کے خلاف جہاد،فوری بلا امتیاز سزائیں دیئے بغیر ممکن نہیں 


پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ موجودہ حالات میں کسی چیز کو مخفی نہیں رکھا جاسکتا، قانون میں تبدیلی کرکے صوابدیدی فنڈ کو مکمل ختم کریں گے، ہم حکومت کرنے نہیں کرپشن کے خلاف جہاد کرنے آئے ہیں،مشکل وقت کا سامنا ہے ، بہت سوچ بچار کرنا ہوگی، سب میرٹ پر اور سب کا احتساب ہوگا،ہم حکومت کرنے نہیں کرپشن کے خلاف جہاد کرنے آئے ہیں،جوحالات اب ہیں وہ پہلے نہیں تھے لیکن انسان کوشش کرے توسب ٹھیک ہوسکتا ہے. ماضی میں لوگ اپنی ذات کے لئے اقتدار میں آ تے رہے، مخصوص نشستوں پر چنے گئے ممبران تیاری کے ساتھ اسمبلی میں آئیں،تمام منتخب ممبران احتیاط سے حکومت کے معاملات چلائیں.

ضرور پڑھیں: منرل واٹرکمپنیوں کےخلاف بھی نوٹس لوں گا،چیف جسٹس پاکستان کاسیمنٹ فیکٹریوں کو پانی فراہم کرنے والے تالاب بند کرنے کا حکم

پاکستان کو معاشی طور پر بہت مسائل درپیش ہیں ، کافی کام کرنا ہے.بلدیات میں مزیداصلاحات لانی ہیں،تعلیم میں مزیدکام کرناہے،5 سال میں اس ملک کو تبدیل کرنا ہے اور قربانیوں کے بغیر تبدیلی نہیں آسکتی . اقتدار ذات کیلیے نہیں،لوگوں کی خدمت کرنی ہے،ہم نے پاکستان کو فلاحی ریاست بنانا ہے، دل میں خوف خدا رکھ کر شب و روز کام کریں. مخصوص نشستوں پر چنے گئے ممبران تیاری کے ساتھ اسمبلی میں آئیں،پاکستان کو معاشی طور پر بہت مسائل درپیش ہیں او ر کافی کام کرنا ہے،مشکل وقت کا سامنا ہے ، بہت سوچ بچار کرنا ہوگی.ان کا مزید کہنا تھا کہ ماضی میں لوگ اپنی ذات کے لیے اقتدار میں آ تے رہے لیکن ہم حکومت کرنے نہیں کرپشن کے خلاف جہاد کرنے آئے ہیں،جوحالات اب ہیں وہ پہلے نہیں تھے لیکن انسان کوشش کرے توسب ٹھیک ہوسکتا ہے،ہمیں اخراجات کم کرنے ہوں گے.محنت ہی سے انسان کامیابی حاصل کرتا ہے، میری جدوجہد واضح مثال ہے،غیر ضروری اخراجات ختم کر کے وسائل عوام کی ترقی پر استعمال کریں گے، کمیٹی بنائیں گے تا کہ وزیراعظم، صدر، وزیروں کے اخراجات کم کرسکیں، صرف 11سال میں روم کو شکست ہوئی اور 13سال میں فارس کو شکست دی، مدینہ کی ریاست کیسے بنی،700سال تک مسلمان دنیا کی عظیم قوم رہے، مدینہ کی ریاست نے قانون کی بالادستی قائم کی اور فلاحی ریاست قائم کی.پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین نے تبدیلی کی ابتدا کا آغاز کردیا‘ چیئرمین پی ٹی آئی نیب میں پیشی کیلئے پشاور میں بغیر پروٹوکول کے سفر کرتے رہے. عمران خان کے ہمراہ علی زیدی‘ اسد قیصر اور بابر اعوان بھی موجود تھے جبکہ عمران خان کی سگنلز پر بھی رکتے رہے. عمران خان ہیلی کاپٹر کیس کے سلسلے میں پشاور مٰں قومی احتساب بیورو نیب کے دفتر میں پیش ہوئے نیب افسران نے ایک گھنٹہ سے زائد وقت تک ان سے پوچھ گچھ کی اور پھر ایک سوالنامہ بھی دے دیا جس کا 15روز کے اندر اندر جواب طلب کیا ہے پشاور میں انہوں نے پروٹوکول نہیں لیا بلکہ اسلام آؓاد میں جب پارلیمانی اجلاس میں شرکت کیلئے بنی گالہ سے گئے تھے تو انہیں جو پروٹوکول دیا گیا تھا اس پر بھی انہوں نے شدید اعتراضات کئے اور آئندہ پروٹوکول نہ دینے کی تلقین کی ہے عمران خان بدستور اپنے 22سالہ موقف کہ کرپشن کا خاتمہ کرپٹ افراد کا احتساب ،عوام کے بنیادی مسائل حل کرنا انصاف کی سستی اور یقینی فراہمی سمیت دیگر منشور پر قائم ہیں انہوں نے دوٹوک الفاظ میں واضح کردیا ہے یہ بات سو فیصد درست ہے کہ ملک وقوم کو درپیش اندرونی وبیرونی مسائل کی اصل جڑ کرپشن ہے اور کرپشن کی وجہ سے آج ملک بدترین دہشتگردی بھوک افلاس اور قرضوں کے بوجھ میں دیا ہوا ہے کرپشن ختم ہوجائے تو مسائل خود بخود حل ہونا شروع ہوجائینگے لیکن کرپشن صرف دعوؤں اور دھمکیوں مقدمات قائم کرنے اور ان میں التواء سے دور نہیں ہوگی اسکا واحد فوری انصاف اور کرپٹ افراد کو کیفر کردار تک پہنچانا ہے ورنہ کچھ نہیں ہوسکے گا ...

ضرور پڑھیں: ’’ سابق کرکٹرز کی عمران خان سے ملاقات لیکن کسی کو بھی ہمت نہ ہوئی کہ ۔ ۔ ۔‘‘ نجی ٹی وی چینل کا ایسا دعویٰ کہ شائقین کرکٹ کی حیرت کی انتہاء نہ رہے گی