پاکستان میں سیاست ملک وقوم نہیں اقتدار ومفادات کیلئے ۔۔! - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

پاکستان میں سیاست ملک وقوم نہیں اقتدار ومفادات کیلئے ۔۔!


پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر و سابق وزیر اعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ کیا مذاکرات کے بغیر دنیا زندہ رہ سکتی ہے ؟نہ کوئی این آر او دینا چاہتا ہے ،نہ ہی کوئی لینا چاہتا ہے ،اسمبلی میں حلف اٹھانے کے بعد پہلا مطالبہ دھاندلی کی تحقیقات کیلئے پارلیمانی کمیشن بنانے کا ہو گا ،نواز شریف کے حوصلے بلند ہیں،انتشار کی سیاست نہیں چاہتے ،دھاندلی کیخلاف تحقیقات کا مطالبہ کر نا اور آوار اٹھانا سب کا حق ہے ، اس حق کو آئینی و سیاسی طریقے سے منوائیں گے ،جہاز میں پیسوں کے تھیلے بھر کر منڈی لگائی گئی ،انسانیت بھی شرما گئی ہے .نوازشریف کی جیل میں قید قوم کیلئے بہت بڑی قربانی ہے ٗوہ لندن سے بیمار اہلیہ کو خدا حافظ کہہ کر آئے، وہ جانتے تھے قید کاٹنا پڑے گی اس لیے وہ اپنی ذات کے لیے نہیں بلکہ قوم کیلئے آئے تھے ٗنواز شریف نے قوم سے دعا کیلئے کہا ہے نواز شریف پوری قوم کیلئے قربانی دے رہے ہیں .

ضرور پڑھیں: کہاں سورج چمکے گا اور کہاں بارشیں ہو ں گی؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کیلئے اہم پیشگوئی کر دی

الیکشن سے پہلے اور بعد میں بھی نواز شریف سے نا انصافی ہوئی ہے .مسلم لیگ (ن) کے صدر نے کہا کہ ملک میں دھاندلی والا الیکشن ہوا ہے، الیکشن سے پہلے بھی پری پول دھاندلی ہوئی، الیکشن کے دن بھی ہوئی، آج صورتحال یہ ہیکہ الیکشن جیتنے اور ہارنے والے دونوں ہی سراپا احتجاج ہیں.شہبازشریف نے کہا کہ دھاندلی کا شور پاکستان میں ہی نہیں بلکہ بیرون ملک میڈیا میں بھی ہے، دھاندلی زدہ الیکشن کو قوم نے رد کیاہے.شہباز شریف نے کہا کہ موسم خرابی کی وجہ سے گزشتہ روز الیکشن کمیشن کے باہر ہم خیال جماعتوں کے احتجاج میں شریک نہیں ہو سکا ، لو گ جو بات کر رہے ہیں وہ کرتے رہیں ،حقیقت یہی ہے جو میں نے بتا دی ہے .انہوں نے کہا کہ یہ کوئی پہلا احتجاج نہیں تھا اس کے بعد بھی ہمار ا احتجاج جاری رہے گا ، ہم نے اسمبلی میں حلف اٹھانا ہے ،مبینہ دھاندلی کے معاملے پر اسمبلی میں بات ہو گی ،تمام جماعتیں اپنی اپنی رائے دیں گی .انہوں نے کہا کہ الیکشن میں دھاندلی ہو ئی ہے ،ایوان میں اس دھاندلی کی تحقیقات کا پہلا مطالبہ ہو گا.شہبار شریف نے کہا کہ الحمد اﷲ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف پر عزم ہیں ، ان کے حوصلے بلند ہیں ، پوری قوم کی دعائیں ان کے ساتھ ہیں ، وہ انتشار کی سیاست نہیں چاہتے لیکن وہ حق کی بات کر رہے ہیں ،ووٹ کے ساتھ بے انصافی ہوئی ہے ، دھاندلی ہوئی ہے ،اس پر آوار اٹھانا ہم سب کا حق ہے . انہوں نے کہا کہ الیکشن سے پہلے اور الیکشن کے دن بھی دھاندلی ہوئی انتخابات میں دھاندلی اسکے خلاف پرامن ایسا احتجاج کہ جس میں عوام کو تکلیف نہ ہو کاروبار متاثر نہ ہوں سو فیصد سیاسی جماعتوں کا حق ہے اور سب سے احسن طریقہ قومی اسمبلی اور سینیٹ میں آواز اٹھانا عدالتوں میں قانونی جنگ لڑنا سب سے بہتر ہے لیکن شہباز شریف نے بدھ کے روز احتجاج میں شرکت نہ کرنے کی وجہ کچھ اور جبکہ انہی کے ساتھیوں نے کچھ اور بتائی ہے پھر زرداری اور بلاول کا خود ساتھ نہ دینا سوالیہ نشان ہے پھر انہوں نے 14اگست کو یوم آزادی نہ منانے کے مولانا فضل الرحمان کے اعلان کی جو حمایت کی ہے کاش و ہ اس سے قبل نواز شریف کے مجیب الرحمان بننے کے بیان متحدہ کے الطاف حسین اور ان دینی جماعتوں کے قیام پاکستان کے وقت مخالفت قائد اعظم کو کافر اعظم کے القابات دینے کے معاملات کو مدنظر رکھتے ...

ضرور پڑھیں: علیم خان ، یاسر راجہ اور یاسمین راشد کی چھٹی! وزارت اعلیٰ پنجاب کیلئے تحریک انصاف کا مضبوط ترین امیدوار سامنے آگیا

مزید خبریں :