انتخابات قریب آتے ہی پھر نفاذ نظام مصطفی کے نعرے  - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

انتخابات قریب آتے ہی پھر نفاذ نظام مصطفی کے نعرے 


ایم ایم اے کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے فضل الرحمان اور سراج الحق نے کہا کہ ہماری معیشت پر آئی ایم ایف اور عالمی بینک کا قبضہ ہوتا جا رہا ہے اور ہم آئی ایم ایف کے بنائے ہوئے بجٹ کو اسمبلیوں میں پڑھ کر سنا دیتے ہیں.فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ یو این چارٹر، جنیوا انسانی حقوق کنوینشن ہمارے انسانی حقوق کنٹرول کر رہے ہیں، بین الاقوامی آرڈر کے تحت یہاں قانون بنایا گیا کہ 18 سال بعد جنس تبدیل کی جا سکتی ہے نیا قانون لایا جا رہا ہے کہ یو این کسی تنظیم یا وابستہ فرد کو دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کر دے تو ہمیں بھی ماننا ہو گا. انہوں نے کہا کہ آج امت مسلمہ کو جنگوں کا ایندھن بنایا جا رہا ہے، ایران اور سعودی عرب کو لڑانے کی کوشش کی جا رہی ہے اور یہ سب امریکا کی سازش ہیجس سیاست کا مقصد بینک اکاونٹس میں اضافہ ہو اس پر لعنت ہے.امیر جماعت اسلامی پاکستان اور متحدہ مجلس عمل کے مرکزی نائب صدر سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ جس سیاست کامقصدبینک اکاونٹ میں اضافہ ہومیں اس پرلعنت بھیجتاہوں،یہ ظالم یہاں کماکر باہر پیسا بھیجتے ہیں,دبئی میں کرپٹ اشرافیہ نیاربوں کی پراپرٹی خریدی،پاکستانی بیرون ممالک سے 20 ارب ڈالر ملک میں بھیجتے ہیں جب کہ کرپٹ حکمران یہاں سے سرمایہ لوٹ کر باہر بھیجتے ہیں,جو بھی ظلم کریگا ہم اس کے خلاف کھڑے ہوجائیں گے،ہم ملک کو ’’پْرامن پاکستان‘‘ بنانے کے لیے ایک ہوئے ہیں ،مجلس عمل کے قافلے میں کوئی پانامہ زدہ، قرض مافیا ، لینڈ مافیا اور شوگر مافیا کا نمائندہ نہیں ہے ،جو اس قافلے سے ٹکرائے گا اس کی سیاست پاش پاش ہوجائے گی،ہم بیت المقدس میں امریکی سفارت خانے کے قیام کے امریکی فیصلے کی مذمت کرتے ہیں، اگر پاکستان میں اسلامی حکومت ہوتی تو گیدڑوں کی طرح ڈر کر خاموش نہ رہتی،بادشاہی مسجد اور مینار پاکستان ’’نیا پاکستان‘‘ کی بجائے اسلامی پاکستان بنانے کا پیغام دے رہے ہیں،70 سال ہو گئے مگر اسلامی نظام نافذ نہیں ہوا لیکن آج مینار پاکستان کہہ رہا ہے کہ ’’نیا پاکستان‘‘ نہیں ’’اسلامی پاکستان‘‘ بناؤ ، 70 سال سے قوم اسلامی نظام کے نفاذ کی منتظر ہے میری لڑائی کسی فرداور خاندان کے خلاف نہیں ظلم کے خلاف ہے،میرا منشور صرف دو نکاتی ہے ، ایک لا الہ الا اللہ اور دوسرا محمد الرسول اللہ،یعنی اللہ اور اس کے رسولؐکے احکامات کا نفاذ،کیونکہ اللہ کی طرح اللہ کا نظام بھی لاشریک ہے،دینی جماعتوں کے اکٹھا ہونے سے امریکہ کے ایجنٹ اور ان کے یار پریشان جبکہ عام عوام خوش ہیں،مخالفین کے ہمارے پہلے ہی اجتماع کو دیکھ کر رنگ اڑ گئے ہیں.انہوں نے کہا کہ کوئی مارشل لاء ہمارے مسائل کا حل نہیں اور نہ ہی جاگیرداروں اور ظالم سرمایہ داروں کی حکومت عوام کے مسائل حل کرسکتی ہے، جب تک زندگی باقی ہے، خون کے آخری قطرے تک پاکستان میں اسلامی نظام کے نفاذ کے لیے لڑیں گے اور مریں گے.انہوں نے کہا کہ میری لڑائی، بھوک، دہشت گردی، بیماری اور ہر ظلم کے خلاف ہے، ظلم ظلم ہے چاہے کوئی جاگیردار، سیاستدان یا جرنیل کرے. اگر 1971 میں متحدہ مجلس عمل جیسا اتحاد ہوتا تو مشرقی پاکستان علیحدہ نہ ہوتا اور نہ بانوے ہزار فوج قید ہوتی.سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے سوال کرتا ہوں کہ امریکی جہاز اگر کرنل جوزف کو لینے پاکستان کی سرزمین پر آسکتا ہے تو پاکستان کا جہاز ڈاکٹر عافیہ کو لینے

امریکی سرزمین پر کیوں نہیں جاسکتا ؟ ہم نوجوانوں کے لیے کھیل کے میدان آباد کریں گے، انھیں فنی تعلیم اور کاروبار کے لیے بلاسود قرض دیں گے،ہم بیروزگاری ختم کریں گے ورنہ بے روزگاری الاؤنس دیں گے، یکساں نظام تعلیم، خواتین کو حقوق دیں گے، الیکشن کمیشن کو امیدواران سے خواتین کو جائیداد میں حصہ دینے کا سرٹیفکیٹ مانگنا چاہیے.ایک وقت تک ذوالفقار علی بھٹو کے خلاف نظام مصطفے کے نفاذ کیلئے اپوزیشن اکٹھی ہوئی تحریک چلی مارشل لاء لگا سب نے مفادات حاصل کئے پھر عرصہ بعد متحدہ مجلس عمل بنی الیکشن ہوئے کسی نے اقتدار حاصل کیا تو کوئی بوجوہ مفادات سے محروم رہا اور یہ اتحاد ٹوٹ گیا آج پھر جب الیکشن قریب اایا تو اتھاد بن گیا پھر نظام مصطفے کے نعرے لگنے شروع ہوگئے جمعیت وفاق میں مارشل لاء تھا یا پیپلز پارٹی اور ن لیگ کی حکومت ساتھ رہی تعاون کیا جماعت اسلامی خیبرپختونخوا میں گذشتہ پانچ سال اقتدار میں تحریک انصاف کی معاون رہی کسی نے بھی اسمبلی فلور پر اسلامی نظام کے نفاذ کیلئے صدا بلند نہیں کی وزارتیں حاصل کیں مفادات حاصل کئے آج پھر ووٹ لینے کیلئے اسلام کا نعرہ لگنا شروع ہوگیا ہے اس میں کوئی دورائے نہیں کہ پاکستانی عوام کے سامنے اسلام کے نعرے لگاؤ ووٹ حاصل کرو اور پھر بھول جاؤ ہمارے سیاستدانوں کو سوچنا چاہیے کہ آخر ایک روز مرات اور پھر اللہ کو بھی جواب دینا ہے خدارا اسلام کے نام پر عوام کو دھوکہ نہ دو ہمارے اعمال بد ہی ہیں کہ آج دنیا بھر میں سب مصائب ومشکلات مسلم امہ پر ہیں .
 

..

مزید خبریں :

سروے