’لاہورکے حمید لطیف ہسپتال میں مجھے ڈرپ لگائی جارہی تھی، اچانک میں نے مڑ کر دیکھا تو ایک خاتون۔۔۔‘ لاہور کے ہسپتال میں زیر علاج لڑکی کے ساتھ ایسا واقعہ پیش آگیا کہ جان کر آپ بھی کہیں گے انسانیت ختم ہوگئی - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

’لاہورکے حمید لطیف ہسپتال میں مجھے ڈرپ لگائی جارہی تھی، اچانک میں نے مڑ کر دیکھا تو ایک خاتون۔۔۔‘ لاہور کے ہسپتال میں زیر علاج لڑکی کے ساتھ ایسا واقعہ پیش آگیا کہ جان کر آپ بھی کہیں گے انسانیت ختم ہوگئی


لاہور(قدرت روزنامہ) کون ہے جو نہیں جانتا کہ ہسپتالوں کا رخ کرنے والے بدقسمت لوگ کسی بیماری اور تکلیف میں ہی مبتلاءہوتے ہیں ورنہ خوشی سے کون ہسپتال جاتا ہے. اب سوچئے کہ کوئی اتنا سفاک بھی ہو سکتا ہے کہ ہسپتال کے بیڈ پر پڑے انسان پر بھی اسے رحم نا آئے اور اس کا سامان چُرا کر چلتا بنے؟ لاہور کے مشہور حمید لطیف ہسپتال میں پیش آنے والے اس واقعے کو دیکھ لیجئے، جو متاثرہ لڑکی نے خود بیان کیا ہے، اور یقیناً آپ بھی سوچیں گے کہ اس دنیا سے انسانیت تو گویا ختم ہی ہو گئی . ویب سائٹ Parhloکے مطابق انیقہ حسنات نامی اس لڑکی نے سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے کے متعلق بتایا ہے کہ ”میرا بیگ حمید لطیف ہسپتال میں چوری ہوا. اس میں میرے اے ٹی ایم کارڈ، پاسپورٹ، CNIC، یونیورسٹی آئی ڈی، سونے کی جیولری اور دیگر چیزیں تھیں. میں ہسپتال کے بیڈ پر پڑی تھی اور مجھے ڈرپ لگی ہوئی تھی کہ اس دوران میرا بیگ چرالیا گیا. سی سی ٹی وی ویڈیو میں بیگ لیجانے والی خاتون کو دیکھا جاسکتاہے لیکن اس نے برقعہ پہن رکھا ہے اور اس کی شناخت ممکن نہیں.“ چوری کا دکھ اپنی جگہ لیکن اس سے بڑھ کر افسوسناک واقعہ اس وقت پیش آیا جب انیقہ نے ہسپتال انتظامیہ کو شکایت کی. ان کا کہنا ہے کہ ہسپتال انتظامیہ سے شکایت کی تو الٹا انہیں ہی ملزم قرار دے دیا گیا. انتظامیہ کا کہنا تھا کہ انہوں نے ہسپتال کا نام بدنام کرنے کے لئے کہانی گھڑی ہے. اب وہ اپنی قیمتی اشیاءکھو چکی ہیں، اور یقیناً ہمیشہ کے لئے، کیونکہ کوئی ان کی مدد تو درکنار بات سننے کو تیار نہیں.

..

مزید خبریں :

سروے