اسلام میں الٹا لیٹنے کی ممانعت کیوں ہے - Daily Qudrat
Can't connect right now! retry

اسلام میں الٹا لیٹنے کی ممانعت کیوں ہے


اسلام آباد(قدرت روزنامہ) اسلام ایک مکمل ضابطہ حیات ہے جس میں زندگی کے ہر پہلو پر رہنمائی موجودہے . چاہئے وہ کوئی بھی صورت حال ہو اسلام اس کے بارے میں بالکل واضح رہنمائی کرتا ہے .

سونے کے حوالے سے نت نئی تحقیقات سامنے آتی رہتی ہے . لیکن جدید تحقیقات میں یہ بات واضح ہوئی کہ سونے کا انداز سب سے بہتر وہی ہے جو کہ اسلام میں بتایا گیا . اللہ کے رسول صلی اللہ وعلیہ وسلم نے الٹا لیٹنے سے منع فرمایا 

طہفہ بن قیس غفاری رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ میں مسجد میں الٹا لیٹا ہوا تھا،نبی علیہ السلام میرے پاس سے گزرے تو اپنے پاؤں سے مجھے ہلایا اور فرمایا کہ تم اس طرح کیوں سو رہے ہو؟سونے کا یہ انداز اللہ کو پسند نہیں(ابن ماجہ، درجہ صحیح،حدیث 3723، کتاب الادب) اب جدید تحقیق کہتی ہے کہ اس طرح لیٹنا انسان کی صحت کے لئے درست نہیں اور اس سے کافی مسائل پیدا ہو سکتے ہیں . ﮈﺍﮐﭩﺮ ﺟﯿﻦ ﻟﻔﮑﻮﻭﭨﺞ ﻧﮯ ﺍﭘﻨﯽ ﺭﭘﻮﺭﭦ ﻣﯿﮟ ﻟﮑﮭﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﭘﯿﭧ ﮐﮯ ﺑﻞ ﺳﻮﻧﺎ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺧﻄﺮﻧﺎﮎ ﺛﺎﺑﺖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ

ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﺍﺱ ﺳﮯ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﺭﯾﮍﮪ ﮐﯽ ﮨﮉﯼ ﮐﻤﺰﻭﺭ ﮨﻮ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ ﺟﺴﮑﯽ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﮨﻤﺎﺭﺍ ﺍﻋﺼﺎﺑﯽ ﻧﻈﺎﻡ ﻏﯿﺮ ﻣﺘﻮﺍﺯﻥ ﮨﻮ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﮔﺮﺩﻥ ﺍﻭﺭ ﮐﻤﺮ ﻣﯿﮟ ﺳﻨﮕﯿﻦ ﻣﺴﺌﻠﮯ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮﻧﮯ ﻟﮕﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺟﻮ ﻟﻮﮒ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﺗﺮ ﭘﯿﭧ ﮐﮯ ﺑﻞ ﺳﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻧﮭﯿﮟ ﺁﮔﮯ ﭼﻞ ﮐﺮ ﻧﯿﻨﺪ ﻧﮧ ﺁﻧﮯ ﮐﯽ ﺑﯿﻤﺎﺭﯼ ﺑﮭﯽ ﻟﮓ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﯿﮟ –ﮈﺍﮐﭩﺮﻭﮞ ﮐﺎ ﮐﮩﻨﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﭘﯿﭧ ﮐﮯ ﺑﻞ ﻟﯿﭩﻨﺎ ﺳﻮﻧﮯ ﮐﺎ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺑﺪﺗﺮﯾﻦ ﺍﻧﺪﺍﺯ ﮨﮯ،ﺍﺱ ﻟﺌﮯ ﭘﯿﭧ ﮐﮯ ﺑﻞ ﺳﻮﻧﺎ ﺻﺤﺖ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺿﺮﺭ ﺭﺳﺎﮞ ﮨﮯ . ﺳﺎﻧﺲ ﮐﮯ ﻭﻗﺖ ﺻﺪﺭﯼ ﭘﻨﺠﺮﮦ ﺁﮔﮯ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﭘﮭﯿﻼﺗﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﭘﯿﭧ ﮐﮯ ﺑﻞ ﻟﯿﭩﻨﮯ ﮐﯽ ﺣﺎﻟﺖ ﻣﯿﮟ ﭘﻨﺠﺮﮮ ﮐﯽ ﯾﮧ ﺣﺮﮐﺖ ﺑﻨﺪ ﮨﻮﺟﺎﺗﯽ ﭘﮯ ﺍﻭﺭ ﭘﮭﯿﭙﮭﮍﻭﮞ ﮐﺎ ﻣﮑﻤﻞ ﭘﮭﯿﻠﻨﺎ ﺍﻭﺭﮨﻮﺍ ﺳﮯ ﺑﮭﺮﻧﺎ ﺑﮭﯽ ﻣﺸﮑﻞ ﮨﻮﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ.ﭘﯿﭧ ﮐﮯ ﺑﻞ ﺳﻮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻣﺮﮔﯽ ﮐﮯ ﺷﮑﺎﺭ ﺍﻓﺮﺍﺩ ﻣﯿﮟ ﺣﺎﺩﺛﺎﺗﯽ ﻣﻮﺕ ﮐﺎ ﺧﻄﺮﮦ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﮨﮯ.ﺍﺱ ﺣﺎﻟﺖ ﻣﯿﮟ ﺭﯾﮍﮪ ﮐﯽ ﮨﮉﯼ ﻏﯿﺮ ﻓﻄﺮﯼ ﺭﺥ ﺍﺧﺘﯿﺎﺭ ﮐﺮ ﻟﯿﺘﯽ ﮨﮯ.ﺍﺱ ﮐﮯ ﻋﻀﻼﺕ ﺍﻭﺭ ﻣﮩﺮﻭﮞ ﭘﮧ ﻏﯿﺮﺿﺮﻭﺭﯼ ﺩﺑﺎﺋﻮ ﭘﮍﺗﺎ ﮨﮯ.ﺍﮔﺮ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﺌﯽ ﺩﻥ ﭘﯿﭧ ﮐﮯ ﺑﻞ ﺳﻮﺗﺎ ﺭﮨﮯ،ﺗﻮ ﺍﺱ ﮐﯽ ﮐﻤﺮ ﺍﻭﺭ ﮔﺮﺩﻥ ﻣﯿﮟ ﺗﮑﻠﯿﻒ ﮨﻮ ﺳﮑﺘﯽ ﮨﮯ.

ﺍﺱ ﮨﯿﺌﺖ ﻣﯿﮟ ﺳﻮﻧﮯ ﺳﮯ ﻋﻤﻮﻣﺎً ﺳﺎﻧﺲ ﻟﯿﻨﮯ ﻣﯿﮟ ﺑﮭﯽ ﺭﮐﺎﻭﭦ ﺟﻨﻢ ﻟﯿﺘﯽ ﮨﮯ.ﺍﻭﺭ ﺑﺴﺎ ﺍﻭﻗﺎﺕ ﺍﯾﺴﺎ ﻟﯿﭩﻨﺎ ﺣﺮﮐﺖ ﻗﻠﺐ ﺍﻭﺭ ﻣﻌﺪﮮ ﮐﮯ ﻋﻤﻞ ﭘﺮ ﺍﺛﺮ ﺍﻧﺪﺍﺯ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ. اسلام کی حقانیت کی ااس سے بڑھ کر کیا دلیل ہو سکتی ہے کہ آج جو ڈاکٹر ہمیں بتا رہے ہیں اس کے بارے میں اسلام کئی صدیاں ٌپہلے بتا چکا ہے . اس لئے سنت نبوی کو اپنائے تا کہ دین و دنیا بہتر ہو

..

مزید خبریں :

سروے